یادوں میں اک یاد ، کوئی دل شکن سی یاد

0
20

یادوں میں اک یاد ، کوئی دل شکن سی یاد
وہ یاد اب کہاں ہے کہ فرصت نہیں رہی

رنگوں میں ایک رنگ ، تری سادگی کا رنگ
ایسی ہوا چلی کہ وہ رنگت نہیں رہی

باتوں میں ایک بات ، تری چاہت کی بات
اور اب یہ اتفاق کہ چاہت نہیں رہی

یادوں میں اک یاد ، کوئی دل شکن سی یاد -  - Picture Shayari

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here

16 − two =